حضرت علی نے فرمایا توبہ کا دروازہ بند ہوجائے گا

کہ ہم کو سخت پریشانی میں ہے تو میرے دوستو میری بہنوں اور میرے بھائی ہو جب سارے دروازے بند ہو تو کوئی بھی وظیفہ کرنے سے آپ کے حالات نہ بدلیں تو تب یہ عمل کرلیں انشاء اللہ اس عمل کی سو فیصد گارنٹی میں دیتا ہوں گا عمل ہیں کوئی پریشانی آتی جب بھی کوئی مصیبت آتی ہے تو آپ راتوں کو اٹھ کر کے تنہائی میں جاکے اللہ سے نفل نماز پڑھتے اور پھر اللہ سے رو رو کر دعائیں مانگتے ہیں بشارت دے دی گئی مگر پھر بھی عاجزی کا حال دیکھیں جس کو دنیا میں ہی معلوم ہو جائے کہ وہ پکا جاتی ہے مگر مانگنے کا انداز دیکھیں اور اللہ سے مانگتے اس قدر کرتے ہیں آپ کی داڑھی مبارک ہو گئے تھے تو اس کی رونے کی آواز آتی ہے ایسے سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ تعالی عنہ اللہ سے مانگتے تو ان کی چھٹیوں کی آوازیں سنائی دیتی ہیں تو پھر اللہ سے مانگتے ہوئے ہماری آنکھوں سے آنسو نکلا ہے تو دور کی بات ہم نے تو روتے نہیں بناتے اللہ سے مانگنے کا صحیح طریقہ ہی نہیں آتا ہے ہماری دعاؤں کی ہے تو پھر ہماری دعائیں قبول ہو گئے ہیں وہ جنتی ہو کر بھی اس قدر عاجزی سے اللہ سے مانگا کرتے تھے میرے پاس بھائی ہے ان کو پیسے کی کمی نہیں تھی پلازوں کے مالک تھے ان کے بیٹے کینیڈا میں کچھ اچھی پوسٹ پر نوکری کرتے مگر ہزاروں پریشانیوں نے ان کو گھیر لیا گھر گیا ہوا تھا اس کو دیکھ کر کے یہ سوچتے ہوں گے کہ اس قدر پیسہ ہے اس پر ہر وقت ان کے آگے پیچھے گھومتے ہیں انہیں کسی قسم کی تکلیف ہو سکتی ہے کسی قسم کی پریشانی ہو سکتی ہے لیکن اگر اس نے اللہ کو ناراض کیا ہے اس میں سمجھ گیا میں نے اس عمل بتایا اور گا آپ کے علاوہ کوئی اور نہ سن سکتا ہوں جہاں آپ کے دل کو یہاں اللہ سے باتیں کروں گا تو کوئی دوسرا میری آواز نہیں سن سکے گا اچھی طرح وضو کر لی جائے نماز بچھائی دو رکعت نماز کی نیت کرے اور مسلے پر کھڑے ہوجائیں اچھی طرح سے آپ نماز پڑھی اسی جگہ سلام پھیرنے کے بعد بیٹھ جائیں پھر اللہ کو اپنے ہی اللہ سے معافی مانگے یا ناراض کیا تھا آپ کی یاداشت کام کے لیے تھے میں بڑا میں نے دل دکھایا تھا میرے محبوب کو ناراض کیا تھا مجھے معاف فرما اپنی بیویوں کو اللہ کے سامنے رو رو کر کے اپنے غموں کو اللہ رو کے فریاد کر کے اللہ کو سنائیں جو آپ پر مصیبت والا وقت آیا ہے آپ اس کو سامنے رکھیں اس کو سامنے رکھ کر کے روئے میرے پاس جو اردو سے بندے ہیں سنا کر کے کہتے ہیں کہ جب ہم آپ کو اپنے دل کے ٹکڑے سناتے ہیں دل ہلکا ہو جاتا ہے اور گناہ گار بندے کو دل کے ٹکڑے سناتے ہوئے اگر دل ہلکا ہو جاتا ہے کہ بادشاہ گر مرا ہوئی نظر اس کے سامنے جب آپ اپنے دل کے ٹکڑے سنائیں گے تو آپ کا دل کیسے نہیں ہوگا یقین مانو اللہ سے رو رو کر کے مانگتے ہوئے دیکھا ہے تو ان کی زندگیوں میں تبدیلی آ چکی ہیں یا نہیں کی نوکریوں پر کام کرتے دیکھا ہے میں نے اسے دل کی اولاد نہیں تھی ان کی جھولیوں کو مرتے ہوئے دیکھا ہے میں نے ان کو رونے کے لئے جو فصلوں کے تباہ ہونے کے لیے رو کر کے اللہ سے مانگتے تھے ان کی فصلوں کا بعد دیکھا ہے میں نے دیکھا ہے جو کہا کرتے تھے ہے بہت بڑی مصیبت آئی ہے ہم مر جائیں گے مگر اللہ سے مانگا تو تمام پریشانیاں ختم ہوگی اللہ صرف اپنی دولت شہرت عزت کرتا ہے مگر اس امت کے لئے علی علی سیدنا محمد وآلہ وسلم ہوں کہ ساری کائنات کے شہنشاہ ساری مخلوق کے پالنے والے میرے اللہ زندگی اور موت کا فیصلہ کرنے والے اے آسمانوں اور زمینوں کے مالک اور سمندروں کے مالک انسان اور جنات کے معبود اے عظیم کے مالک ہیں فرشتوں کے معبود اور آپ کے مالک دینے والے اچھا اللہ ہم تیرے گناہ گار بندے ہم تیرے ہتھ دا کاربن دے ہم تیرے بندے اور تیری پاکی بیان کرتے ہیں اور تیرے آگے دعا کے لیے ہاتھ پھیلاتے ہیں ہماری خطاؤں کو معاف فرما فروٹ مارے گناہوں کو معاف فرما دے اے اللہ ہمیں ہمارے ماں باپ اور ہمارے اہل و عیال اور تمام مسلمانوں پر مردوں اور عورتوں کو بخش دے اور سب تعریف اللہ ہی کے لیے ہے جو تمام جہانوں کا پالنے والا ہے اے اللہ پاک پیارے نبی پاک کے صدقے میں ہمارے غیرہ کبیرہ گناہوں کو معاف فرما دے اور سے بچاتے ہیں ہمارے والدین اور تمام مومنوں اور مردوں اور عورتوں کو بخش دے اے اللہ پاک ہمارے قبر کے عذاب سے ہم محفوظ رکھتا ہے اللہ پاک جو بے اولاد ہیں تو نے اولاد عطا فرما جو قرض دار ہیں جب ان کو قرض معاف فرما ارے جو بے روزگار ہیں یا اللہ تو نے روزگار عطا فرما دے اے اللہ پاک ہم سب کو اپنے ماں باپ کا فرمانبردار بنا لیں اور اپنے ماں باپ کی خدمت کرنے کی توفیق عطا فرما اے اللہ پاک نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم کے صدقے میں جنہوں نے اس کار خیر میں حصہ لیا ان کی اس کاوش کو قبول فرما اور اس کام کو ہمارے لئے تو شیعہ بناتے ہوتے ہیں ہماری زبان پر اور دل اس بات کی شہادت دے رہے ہو

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*